Saturday, November 25, 2006

ننھے پھولوں سے متأثر ہو کر

ننھے بچے ننھے پھولوں سے بھی زيادہ خوش کُن اور نازک ہوتے ہيں ۔ ميری پوتی مِشَيل ماشاء اللہ سوا دو سال کی ہوگئی ہے ۔ اس عمر ميں بچے بڑی مزيدار باتيں اور حرکتيں کرتے ہيں ۔ مِشَيل کے والدين [زکريا اور عنبرين] شايد چاہتے ہيں کہ اُسے سيدھا ہی يونيورسٹی ميں داخل کرايا جائے ۔ دو سال کی عمر سے بھی پہلے مِشَيل کو وہ کچھ سيکھانا پڑھانا شروع کر ديا جو پانچ چھ سال کے بچے کو سکھايا يا پڑھايا جاتا ہے ۔ اس ميں سے ايک نظم کا واقعہ جو مِشَل کو ياد کرائی گئی
It is an egg
Bird came out of egg
چند دن بعد مِشَيل نے سوچا کوئی تجديد ہونا چاہئيے اور اس نے بنا ديا
It is an egg
Dad came out of egg
ليکن مِشَيل کے ايک ہم عمر بچے نے سوچا کہ تصديق کی جائے کہ بڑے لوگ صحيح بھی کہتے ہيں يا غلط ۔ اُس نے باورچی خانہ ميں جا کر انڈے توڑ توڑ کر ديکھنا شروع کيا کہ پرندہ اس ميں کہاں چھُپا ہوا ہے ۔

2 Comments:

At 11/26/2006 07:36:00 PM, Blogger urdudaaN said...

بچّے تو بہت پیارے ہوتے ہی ہیں، خاص طور پر اِس عمر میں!

یہ بتائیے اردو کا کیا حال ہے؟

ہند و پاک میں رہنے والے مسلمان تو کہنے لگے ہیں کہ اردو کا کیا فائدہ!
میں یہ جاننا چاہ رہا تھا کہ آجکل امریکہ میں اردو کا سوال پیدا ہوتا ہے یا نہیں؟

 
At 11/27/2006 07:18:00 AM, Blogger iabhopal said...

Urdudaan Sahib
Main aajkal Lahore main hoon aur maizbaan ka computer istemaal ker rha hoon jis main Urdu nahin hai. Main nay Urdu to nasab kar di laikin Urdu Takhta nasab nahin ho pa rha.

jnab jahan tak meri poti ka ta'aluq hai, wo Masha Allah Urdu aur Angrezi dono samajhti aur bolti hai. Wesay aab ki baat bilkul sahih hai hindopakistan kay logon kay muta'aliq

 

Post a Comment

links to this post:

Create a Link

<< Home